2011/02/14

محبت مجھے ان جوانوں سے ہے ۔۔۔

ہاں ! محبت مجھے ان جوانوں سے ہے !

کیا پتا کہ ۔۔۔۔۔ آج کے دن ان جوانوں کے ہاتھوں یہ جو سرخ گلاب نظر آتے ہیں ، کل یہی ہاتھ قلم اور کتاب تھام لیں
کیا پتا کہ ۔۔۔۔۔ آج کی-بورڈ پر ان کی انگلیاں صنف مخالف کو مخاطب کرتی ہیں ، کل یہی انگلیاں علم و تحقیق کے سمندروں کو کھنگالیں
کیا پتا کہ ۔۔۔۔۔ آج جن کے ہاتھوں میں زبردستی کے کلاشنکوف تھمائے گئے ہیں ، کل مسیحا بن کے زخمیوں اور بیماروں کی نبض ٹٹولیں
کیا پتا کہ ۔۔۔۔۔ آج جنہیں فرقہ ، مسلک ، جماعت ، گروہ کے ٹکڑوں میں بانٹا گیا ہے ، کل وحدتِ امت کا نشان بن کے جگمگائیں
کیا پتا کہ ۔۔۔۔۔ آج جو سوالی بن کے در بہ در بھٹک رہے ، کل اپنے در سے سوغات لٹائیں ۔۔۔

ہر سال ایک یہ دن آتا ہے۔ ایک نئی امید ایک نئی صبح روشن ہوتی ہے تو مفکر اسلام یاد آتے ہیں۔ روح کی تڑپ تھی کہ بول اٹھے تھے ۔۔۔۔

یارب دِل مسلم کو وہ زندہ تمنا دے
جو قلب کو گرما دے، جو روح کو تڑپا دے

پھر وادئ فاراں کے ہر ذرّے کو چمکا دے
پھر شوقِ تماشا دے، پھر ذوقِ تقاضا دے

اس دور کی ظلمت میں ہر قلبِ پریشاں کو
وہ داغ محبت دے، جو چاند کو شرما دے

بے لوث محبت ہو، بیباک صداقت ہو
سینوں میں اجالا کر، دل صورتِ مینا دے

اے نوجوان ! کہ تری شان کے بارے میں علامہ نے تو فرمایا تھا :

ہر لحظہ ہے مومن کی نئی شان نئی آن
گفتار میں کردار میں اللہ کی برہان

قہاری و غفاری و قدوسی و جبروت
یہ چار عناصر ہوں تو بنتا ہے مسلمان

یہ راز کسی کو نہیں معلوم کہ مومن
قاری نظر آتا ہے‘ حقیقت میں ہے قرآن!

اک روشن صبح کی امید میں دعا کی تھی علامہ نے ۔۔۔۔۔ آج پھر وہی دعا دہرانے کو جی چاہتا ہے :

اپنے پروانوں کو پھر ذوقِ خود افروزی دے
برقِ دیرینہ کو فرمانِ جگر سوزی دے

آنکھ کو بيدار کر دے وعدۂ ديدار سے
زندہ کر دے دل کو سوز جوہر گفتار سے

عزائم کو سینوں میں بیدار کر دے
نگاہ مسلماں کو تلوار کر دے

دلوں کو مرکز مہر و وفا کر
حریم کبریا سے آشنا کر
جسے نان جویں بخشی ہے تو نے
اسے بازوئے حیدر بھی عطا کر

ضمیر لالہ میں روشن چراغ آرزو کر دے
چمن کے ذرے ذرے کو شہید جستجو کر دے

4 comments:

  1. بہت اچھی شئرنگ ہے

    ReplyDelete
  2. باذوق بہت خوب لکھا ۔ اور انشااللہ اچھی امید ہر وقت رکھنی چاہیے ۔وہ دن دور نہیں جب ہمارے نوجوان اپنے ملک پاکستان کو ایک نئے پاکستان کی صورت میں سامنے لاہیں گے ۔۔۔

    ReplyDelete
  3. pewasta rah shajar se
    umeede-e-bahaar rakh :)

    ReplyDelete
  4. بہت خوب باذوق بھائی، بہت اچھا لکھاہے

    ReplyDelete