2006/06/11

پسندیدہ اشعار


اک شجر ایسا محبت کا لگایا جائے
جس کا ہمسائے کے آنگن میں بھی سایا جائے
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
کہہ رہا ہے موجِ دریا سے سمندر کا سکوت
جس کا جتنا ظرف ہے اتنا ہی وہ خاموش ہے
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
یہ سورج بھی بسا اوقات کارآمد نہیں ہوتا
اندھیروں سے نکلنے کے لئے بینائی کافی ہے

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
چاند کا کردار اپنایا ہے ہم نے دوستو
داغ اپنے پاس رکھے روشنی بانٹا کئے

2 comments:

  1. اچھے اشعار ہیں اور آپکا بلاگ بھی کافی اچھا ہے۔

    آپ نے بیاض دیکھی ہے

    Bayaaz.blogspot.com

    ReplyDelete
  2. these shair are awesome,,,,
    esp the first one..

    ReplyDelete